Dushman Ko Barbad Karne Ka Taweez ?
Dushman Ko Barbad Karne K Liye Asal Me Koe Taweez Mojood Nahi . Aur Na hi Allah ki Kalam k Zaryia Kisi ko Nuqsan Dyia Ja Sakta Hai . Kisi Dushman Ko Barbad Karne Ya Na Karne Ka Fasila Allah Ka Hai . Insaan Apni Marzi Se Kisi ko Faida Ya Nuqsan Nahi de Skata .
Apne Dushman Se Jan , Mal , izat Aur Aulad ki Hifazat k liye Wazifa Kyia Ja Sakta Hai Iss k Baad Allah Ka kaam Hai K Wo Aap k Dushman ko Barbad Karta Hai Ya Asay hdayt Deta Hai .
Iss Post mein Dushman Se Nijat Aur Hifazat k liye Khas Wazifa Bataia gyia Hai . Agr Koe Bhai Ya Behan Apne Kisi Dushamn ki Waja Se Pareshan Hain Tu Inn k liye Ya Qabizu Ka Wazifa Bataia gyia Hai . Iss Wazifa Ko Karne Se Aap ko Aap k Dushman Se Hameesha k liye Nijat mil jae ghe Insha Allah .
Ye Baat Apne Zehan mein Rakhain k Dushman ko Barbad Karne , Dushman ko halak karne ,Dushman Ko Marne Ya Dushman Ko Pagal karne k liye Allah ki Kalam Ka Istimal Nahi kyia ja Sakta Aur Na hi Aysa Momkan Hai .
Allah Se Sirf Pannah Manghay Aap ki Har Pareshani Ka Hal ho jae gha . Aur Allah ki Pannah Hasil Karne k liye hi Aap ko Ya Qabizu Ka TAweez Ka Asan Amal Bataia gyia Hai .

Dushman Ko Barbad Karne Ka Taweez Urdu

یاد رہے کہ اللہ کی کلام کے زریعے کسی کو ہدائت تو مل سکتی ہے لیکن کوئی کسی کو برباد نہیں کر سکتا ۔ کسی کو برباد کرنے کا اختیار صرف اللہ کے پاس ہے ۔ بہت سے لوگ اپنے دشمن کو برباد کرنے کے لئے تعویزات کا آسرا کے کر اپنا وقت برباد کرتے ہیں ۔ اگر کسی بھائی یا بہن کی جان ، مال ، عزت ، اولاد یا گھر کو دشمن سے خطرہ ہے تو اس دشمن سے بچنے کے لئے وظیفہ کیا جا سکتا ہے اب اس وظیفہ کی برکت سے اللہ کی ذات آپ کو دشمن سے نجات ضرور عطاء فرمائیں گے لیکن وہ نجات آپ کو کیسے ملے گی یہ فیصلہ اللہ کا ہے کسی انسان کے چاہے یا نہ چاہے جانے سے کچھ بھی نہیں ہوتا ۔
اللہ کی ذات آپ کے دشمن کو ہدائت دے کر آپ کی نجات کا وسیلہ بنے یا آپ کے دشمن کو برباد کرئے فیصلہ اللہ ہی نے کرنا ہے ۔ اگر تو آپ کے دشمن سے ہر کسی کی جان ، مال اور عزت کو خطرہ ہے تو وہ ضرور برباد ہوگا لیکن اگر ایساء نہیں تو اللہ کی ذات اسے ہدائت دے کر آپ کی نجات کا وسیلہ پیدا فرمائیں گے ۔

Dushman Ko Barbad Karne Ka Taweez

اگر کسی بھائی یا بہن کو اپنے دشمن سے کسی قسم کا خطرہ لاحق ہے اور وہ آپ کو نقصان دینے سے باز نہ آرہا ہو تو اس کے لئے آپ منگل یا جمعرات کے روز فجر کی نماز کے بعد مشک ، عنبر ، زعفران اور گلاب سے اللہ کے صفاتی نام یا حفیظ یا رقیب یا قابض تحریر کرکے اپنے گھر میں بھی رکھیں اور اپنے پاس بھی رکھیں ۔ اس نقش کی برکت سے آپ دشمن ، کالا جادو ، جنات ، نظربد ، حادثات اور ہر قسم کے نقصان سے اللہ کی حفاظت میں رہیں گے اور اگر کوئی دشمن بار بار آپ کو نقصان دینے کی کوشش کر رہا ہے تو وہ خود بخود اپنے انجام کو پہنچ جائے گا ۔ یہ قرانی تعویز بے حد پاورفل ہے اور اس قرانی تعویز کی وجہ سے آپ کے دشمن آپ سے ہمیشہ خوف ذدہ بھی رہیں گے ۔ لہذا دشمن سے حفاظت کے لئے یہ قرانی تعویز ہر فرد کو اپنے گھر میں ضرور رکھ لینا چاہئے ۔
اگر کسی بھائی یا بہن کو اس اس قرانی نقش کے بارئے میں مزید معلومات درکار ہیں تو وہ آمنہ بہن سے رابطہ کر سکتے ہیں ۔

Whatsapp Amna Behan

0092 306 3441786

Serch Any Wazifa Here

Pin It on Pinterest